ناصرہ فاروقی کو شریف اکیڈمی جرمنی کا ڈائریکٹر فرانس نامزد کیا گیا

شریف اکیڈمی جرمنی کے بورڈ آف ڈائریکٹرز کے متفقہ فیصلے کے مطابق فرانس میں مقیم ادبی علمی اور سماجی شخصیت اور معروف صحافی محترمہ ناصرہ فاروقی کوشریف اکیڈمی کا ڈائریکٹر فرانس نامزد کیا گیا ۔31اگست 2012کو فرانس میں منعقد ہونے والی تقریب ’’فیض فہمی‘‘میں اکیڈمی کی ایگزیکٹو ڈائریکٹریورپ محترمہ سمن شاہ نے شفیق مراد کے پیغام کے مطابق محترمہ ناصرہ فاروقی کی بطورڈائریکٹرفرانس نامزدگی کا اعلان کیا۔جس پر سامعین نے انتہائی خوشی کا اظہار کرتے ہوئے ہر طرح کے تعاون کی یقین دہانی کرائی۔اور علم و ادب کی روشنی پھیلانے کے عزم کا اظہار کیا ۔
ناصرہ فاروقی کراچی کے ایک علمی ادبی گھرانے میں پیدا ہوئیں ۔تعلیم کے ساتھ ساتھ غیر نصابی سرگرمیوں میں بھی بھر پور شرکت کرتیں ۔ کراچی یورنیورسٹی سے گریجویشن کی ۔اور پاکستان انٹرنیشنل ائرلائن میں ملازمت کی ۔1994 سے فرانس میں مستقل سکونت اختیار کی ۔فرانسیسی زبان کے مختلف کورسز کرنے کے بعد بیوٹی کنسلٹنٹ اور بیوٹیشن کا ڈپلومہ حاصل کیا۔صحافت کے ساتھ ساتھ علم کے مختلف شعبوں میں دلچسپی رکھتی ہیں۔انکے حالاتِ حاضرہ پرکالم اہل نقدوِ نظر کے لئے توجہ اور دلچسپی کا موجب بنتے ہیںْ ۔2008میں پریس کلب کی ممبر شپ حاصل کی پندرہ روزہ اخبار’’شانہ بشانہ‘‘ کو پیرس میں متعارف کروایا۔اوراخبار کے بطورِ ریذیڈنٹ ایڈیٹر کے اپنی خدمات سرانجام دیں ۔اسطرح پیرس میں مقیم پاکستانیوں کی سماجی ،ثفاقتی اور سیاسی سرگرمیوں کو متعارف کرانے کا موقع ملا ۔’’گجرات لنک ‘‘آن لائن اور پرنٹ ہونے والے اخبار کی ریزیڈنٹ ایڈیٹر مقر ر ہوئیں ۔ تحریکِ انصاف میں ترجمان کی حیثیت سے شمولیت کی ۔امیگرنٹس ایسوسی ایشن کی جانب سے بہترین والدین کا ایوارڈ ملا۔پاکستان پریس کلب کی جانب سے 2012میں انکی اعلی کارکرگی پر اعزازی شیلڈ دی گئی۔ناصرہ فاروقی متعددثفاقتی اورعلمی پروگرام منعقد کرا چکی ہیں انکی کی خداداد صلاحیتوں اور جذبۂ خدمت کے پیشِ نظر انہیں شریف اکیڈمی کا ڈائریکٹر فرانس نامزد کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔شفیق مراد نے کہا کہ ناصرہ فاروقی پُرعزم بلند حوصلہ اوراعلی سوچ کی حامل باہمت خاتون ہیں ۔انکا جذبۂ حب الوطنی اور جذبۂ خدمتِ خلق قابلِ مثال اور قابلِ تقلید ہے۔انہوں نے اکیڈمی کے بورڈ آف ڈئریکٹرز کی جانب سے انہیں مبارکباد پیش کی اورانکی ترقی اور کامیابی کے لیے نیک خواہشات کا اظہار کیا۔
Viewers: 989
Share