جشنِ ولادتِ مصطفے مشاعرہ

جشنِ ولادتِ مصطفےﷺ ۔ مشاعرہ
زیرِ اہتمام: پیس اینڈ ایجوکیشن فاؤنڈیشن لاہور

رپورٹ: فوزیہ مغل، لاہور۔ ۲۲جنوری بروز منگل ۶ بجے شام’’ پیس اینڈ ایجوکیشن فاؤنڈیشن لاہور‘‘ زیرِ اہتمام جشن ولادتِ مصطفےؐ کے عنوان سے ایک شاندار مشاعرے کا اہتمام کیا گیا۔ جس کی نظامت پنجابی کے معروف شاعر عبدالستار عاجز نے کی صدارت معروف فارسی دان پروفیسر محمد ریاض احمد نے کی ،مہمانِ خصوصی فارسی کے معروف شاعر صوفی محمد حنیف تھے،دیگر شعراء کرام ۔ڈاکٹر ظفر اقبال جاذبؔ ،ڈاکٹر محمود رامش ، قدیر احمد ، فاطمہ یوسف، مہوش کوثر ، دعا ذاہد، شاہد معین، محمد ارشد، عظیم بلند، کیف علی،اور میزبان مشاعرہ فوزیہ مغل :

مشاعرے کا آغاز ستار عاجز نے تلاوتِ کلامِ پاک سے کیا، دعا ذاہد نے ہدیہء نعت رسولِ اقدس میں پیش کی سعادت حاصل کی ۔
*دعا زاہد ؂
اے طیبہ اے طیبہ اُمت کا سفینہ
روئے زمیں پر کوئی نہیں ایسا ہے مدینہ
*پروفیسر ریاض احمد ؂
آب جوُ تشنگی آوربدست
وہ آئیں گے حوض کوثر پر کیا!جام پلایا جائے گا
نبیؐ آتے رہے ہیں جہاں میں مگر
نبیؐ آخر زماں محمدؐ ہیں
فکر فردا سے میں کیوں رھوں غمزدہ
رہبرِ کارواں ، محمدؐ ہیں
*صوفی محمد حنیف سلطانی ؂
سرِ محشر بھی لوئیس گے بہاریں موسمِ گل کی
وہ خوشبو کی طرح ہر سو سراسر رونما ہونگے
محبت آج جنہیں انسے
تو کل انسے وہ کہہ دیں گے
تمہیں کیا غم گرجنت تو ہم ہی درکشا ہونگے
*فوزیہ مغل ؂
لب پہ ہر دم نبیؐ کا قصیدہ رہا
بس یہی زندگی کا عقیدہ رہا
سر جھکا نہ مرا جو کبھی بھی کہیں
سبز گنبد کے آگے خمیدہ رہا
*عبدالستار عاجزؔ ؂
رحمت دی پہچان محمد ؐ
محبوبِ رب رحمان محمدؐ
عقلاں دی حد جس تھاں مکدی
عشق نے اوتھوں قدم اٹھایا
تپدا جُلا، کنڈی ہلدی
لکھاں کوہاں سفر مکایا
*ڈاکٹر محمود رامشؔ ؂
ہوئے یون پیدا محمدؐ پیغمری کے لیے
ہو آفتاب طلوع جیسے روشنی کے لیے
ہر ایک در پہ نویدِ سحر نے دستک دی
اٹھو کہ ہو گیا ہے وقت بندگی کے لیے
*ڈاکٹر ظفر اقبال جاذبؔ ؂
ذکرِ رسولِ پاکِ ؐ میری زندگی بھی ہے
مجھ کو یقیں ہے کہ بندگی بھی ہے
*قدیر احمد ؂
میں صدائیں دے رہا ہوں آقاؐ مدّد کو آنا
گنہگار میں بہت ہوں مجھے آپ ؐ بخشواونا
تھی بھول میرے آقاؐ کہ میں کما رہا ہوں
صدقہ آپ ؐ کا ہے میں جو بھی کھا رہا ہوں
*فاطمہ یوسف ؂
محبوب دا میلہ اے
محفل نوں سجائی رکھنا اودھے آون دا ویلا یے
بدل پیا چھائے ہوئے نیں
انج پیا لگدا اے جیوے آقاؐ آئے ہوئے نین
* مہوش کوثر ؂
کتنی افضل و اعلیٰ ذات محمدؐ کی ہے
ہر زباں پہ اب مناجات محمدؐ کی ہے
تب سے جھک گئیں ہیں احترام سے پلکیں میری
وردِ لب جب سے نعت محمدؐ کی ہے
*شاہد معین
روئے کون و مکاں پہ نکھار آگیا
بے کسوں کے دلوں کو قرار آگیا
مر حبا مر حبا ہر کسی نے کہا
آمد مصطفےؐ تیری کیا بات ہے
مشا عرہِ جشن ولادتِ مصطفےؐ کے اختتام پر عظیم بلند نے تمام شعراء کرام کا پیس اینڈ ایجوکیشن فاؤنڈیشن لاہور کی جانب سے شکریہ ادا کیا، اور فوزیہ مغل نے تمام شعراء کرام کو کتابیں گفٹ دیں۔

Viewers: 1583
Share