معروف شاعر رضا ٹوانہ انتقال کر گئے۔

افضل چوہان، مظفر گڑھ سے۔

ٹکرائو جو ملت کے خدائوں سے ہوا تھا

آغازِ بغاوت میرے گائوں سے ہوا تھا

وہ شخص مرا نام مٹانے پہ تلا ہے

جو شخص جواں میری دعائوں سے ہوا تھا

کے خالق، مظفرگڑھ سے تعلق رکھنے والے اردو کے مضبوط لب و لہجہ والے پختہ کار اور معروف شاعر جناب رضا ٹوانہ کا انتقال پر ملال ہو گیا ہے۔ ان کا انتقال گزشتہ رات یعنی 9اور 10 فروری کی درمیانی رات 8بجے کارڈیالوجی ہسپتال ملتان میں عارضہ قلب سے ہوا۔ انہیں کافی عرصہ سے دل کا عارضہ لاحق تھا۔ ان کی عمر 68برس تھی۔ سہ ماہی قلم کہانی کے ایڈیٹر تھے۔ کربِ سحر ، موم کی سیڑہی ، انتظار مت کرنا اور چادرِ‌زینب۔۔۔۔۔ان کے چار مجموعہ کلام شائع ہوئے۔ مرحوم ڈویژنل سپورٹس آفیسر کے عہدے سے ریٹائرمنٹ لے چکے تھے۔ ان کی نمازِ جنازہ آج یعنی 10 فروری کو فیاض پارک مظفرگڑھ میں ادا کی گئی اور مظفرگڑھ میں دفن کیا گیا۔ مرحوم نے پسماندگان میں بیوہ، چار بیٹے اور دو بیٹیاں چھوڑیں۔ خدا انہیں صبرِ جمیل عطا فرمائے۔اردو سخن ڈاٹ کام، سخنور فورم مظفرگڑھ ، سی ایس این مظفرگڑھ ، بزمِ ستاری مطفرگڑھ، افضل چوہان کے ساتھ ساتھ اہل مظفرگڑھ نے اس دکھ کو شدت سے محسوس کیا ہے۔

Viewers: 1113
Share