فیض احمد فیض کے 102 ویں یومِ پیدائش کے موقع پر “فیض مشاعرہ”

رحیم یار خان ادبی فورم کے زیرِ اہتمام فیض احمد فیض کے 102 ویں یومِ پیدائش کے موقع پر “فیض مشاعرہ” کا انعقاد
فیض نے ہمیشہ معاشرے کے مظلوم طبقات کے حق میں جابر حکمرانوں کے سامنے کلمہ حق بلند کیا : جبارواصف
رحیم یار خان (اردوسخن رپورٹ ) رحیم یار خان ادبی فورم کے زیرِاہتمام نامور شاعر فیض احمد فیض کے 102ویں یومِ پیدائش کے موقع پر فیض مشاعرہ فورم کے صدر جبار واصف کی رہائش گاہ پر منعقد ہوا تقریب کے مہمانِ خصوصی اسسٹنٹ کمشنر مجیب الرحمٰن تھے مہمانانِ اعزاز میں ڈپٹی ڈائریکٹر کالجز پروفیسر مرزا تنویرالحسن اور پرنسپل سٹی سکول رانا طاہر شامل تھے تقریب میں رحیم یار خان کی نمائندہ ادبی تنظیموں کے اراکین، شعر ا ء کرام اور سرکردہ علمی و ادبی شخصیات نے شرکت کی تقریب کی نظامت کے فرائض فورم کے جنرل سیکرٹری ناصر محمود لالہ نے سر انجام دیئے تقریب کے پہلے مرحلے میں مہمانِ خصوصی مجیب الرحمٰن اور مہمانانِ اعزاز نے فیض کی سالگرہ کا کیک کاٹا مرزا تنویر الحسن، رانا طاہر، خالد محمود ذکی، جبار واصف ، مولانا مقصود احمد،پروفیسر عارف ایوب، پروفیسر مزمل سعدی، پروفیسر عمران بشیراور شہباز نیّر نے فیض کے فن اور شخصیت پر اظہارِ خیال کیا مقررین نے فیض کے انقلابی کلام کو انسانیت کا سرمایہء حیات قرار دیا فیض نے ہمیشہ معاشرے کے مظلوم طبقات کے حق میں جابر حکمرانوں کے سامنے کلمہ حق بلند کیا اور اس پاداش میں طویل قید کی صعوبتیں بھی برداشت کیں فیض چار مرتبہ نوبل پرائز کے لئے نامزد ہوئے 1962 میں انہیں سوویت یونین نے لینن پیس پرائز ملا فیض نے بھٹو کے دورِ حکومت میں کلچر اور وزارت تعلیم کے مشیر کے طور پر بھی خدمات سرانجام دیں بھٹو کے دورِ اقتدار کے خاتمے پر فیض کو پاکستان چھوڑنا پڑا اوربیروت لبنان میں پناہ لی 1982 میں خرابی صحت کے باعث لبنان سے وطن واپسی ہوئی اور 1984میں دنیائے ادب کا یہ سورج ہمیشہ ہمیشہ کے لئے غروب ہو گیا فیض کے تمام شعری مجموعوں کو نسخہ ہائے وفا میں یکجا کیا گیا جوآج اردوشاعری کی روح تصور کیا جاتا ہے تقریب کے دوسرے مرحلے میں فیض مشاعرہ کا آغاز ہوا خالد محمود ذکی، جبار واصف، جاوید حمید خلجی،ناصر محمود لالہ،مزمل سعدی، خالد جاوید، شہباز نیر، شہزاد عاطر، قمر بشیر، شہباز حمید گوہراور دیگر نے اپنا کلام پیش کیا اسسٹنٹ کمشنر مجیب الرحمٰن نے رحیم یارخان ادبی فورم کو خوبصورت تقریب کے انعقاد پر مبارکباد پیش کی۔
Viewers: 853
Share