معروف شاعر جبار واصف کے ساتھ ایک شام

رحیم یارخان(اردوسخن )ادبی تنظیم سوچ کے زیر اہتمام معروف شاعر اور رحیم یارخان ادبی فورم کے صدر جبار واصف کے اعزاز میں ایک شعری نششت علامہ اقبال آڈیٹوریم میں منعقدہوئی ۔ تقریب میں شہر کی نمائندہ ،علمی ادبی و صحافتی شخصیات نے شرکت کی ۔تقریب کی صدارت نامور صحافی، شاعر، ادیب اور کالم نگار محمود شام نے کی۔ مہمان خصوصی ڈپٹی ڈائریکٹر کالجز پروفیسر مرزا تنویرالحسن تھے جبکہ مہمانان اعزاز میں پروفیسر ثاقب عمران پرنسپل سپرئیر کالج، رانا طاہر بشیر پرنسپل دی سٹی سکول اور ڈپٹی ایجوکیشن آفیسر راشدہ کامل شامل تھیں۔ بین الااقوامی شہرت یافتہ نعت خواں غلام صابر یوسفی نے جبار واصف کا نعتیہ کلام پیش کیا جبکہ مقامی گلوکار سلامت علی نے صاحب شام کی غزلیات پیش کیں۔ پروفیسر عمر ان بشیر، پروفیسر عارف ایوب اور خالد محمود ذکی نے جبار واصف کی شاعری پر مقالہ جات پیش کیے۔ مہمان خصوصی پروفیسر مرزا تنویر الحسن نے جبار واصف کو شاعر حقیقت قرار دیا اور کہا کہ ان کی شاعری عصر حاضر میں عام آدمی کودرپیش مسائل کی بھر پور عکاسی کرتی ہے۔ دیگر مقررین ناصر محمود لالہ، پروفیسر ثاقب عمران،رانا طاہر بشیر اور راشدہ کامل نے جبار واصف کی شاعری کو بہترین الفاظ میں خراج تحسین پیش کیاصاحب صدر محمود شام نے کہا کہ جبار واصف کی شاعری میں انقلابی رنگ نمایاں ہے اور ان کی شاعری معاشرہ کو درپیش مسائل کا نوحہ ہے۔ انہوں نے کہاکہ جبار واصف کامنفرد اسلوب انہیں اپنے ہم عصروں میں ممتاز کرتا ہے انہوں نے رحیم یارخان ادبی فورم کے قیام اور شہر کی ادبی تنظیموں کے اتحاد ویگانگت کو بھی سراہا۔ ادبی تنظیم سوچ کے صدر ناصر محمود لالہ نے محمود شام کارحیم یارخان آمد پر شکریہ ادا کیا ۔ اس موقع پر شہر کی علمی شخصیات ریجنل ڈائریکٹر علامہ اوپن یونیورسٹی وزیر احمد آغا، ڈائریکٹر نائس ڈگری کالج حفیظ الرحمن قاضی، عبدالقادر شہزاد، ڈاکٹر کامران خان، عزیزصدیقی کے علاوہ شہر کی دیگر معزز شخصیات موجودتھیں تقریب کے آخر میں ملکی سلامتی کے لئے دعا کی۔
Viewers: 998
Share