رسمِ اجرأ DVDسترھواں عالمی فروغِ اُردو ادب ایوارڈ اورانیسواں عالمی مشاعرہ2014ء

Dvd-Group-01
دوحہ(رپورٹ:فرتاشؔ سیّد )عالمی شہرت یافتہ ادبی تنظیم ’’مجلسِ فروغِ اُردو ادب دوحہ ۔قطر‘‘ کے زیرِاہتمام سترھویں عالمی فروغِ اُردو ادب ایوارڈ اورانیسویں عالمی مشاعرہ۲۰۱۴ء کی ڈی وی ڈی کی رسمِ اجرأ سویس بیل ہوٹل میں انعقاد پذیر ہوئی،جس کی صدارت چیئرمینِ مجلس محترم محمد عتیق نے کی،مہمانِ خصوصی محترم راشد نظام (کمیونٹی ویلفیئراتاشی ،سفارت خانۂ پاکستان)تھے جب کہ فرتاشؔ سیّد (راقم الحروف) نے نظامت کے فرائض سر انجام دیے۔
تقریب کا باقاعدہ آغاز اللہ تعالیٰ کے بابرکت نام سے ہوا ،تلاوتِ کلامِ پاک کی سعادت قاری تصور حسین نے حاصل کی۔یاد رہے کہ ۱۹۹۶ ؁ء سے تاحال تواتر اور تسلسل کے ساتھ ہر سال ایک ہندوستانی اور ایک پاکستانی ادیب کی خدمت میں پیش کیا جانے والا ’’عالمی فروغِ اُردو ادب ایوارڈ‘‘ ایک لاکھ پچاس ہزار کیش اور طلائی تمغے پر مشتمل ہے۔ ۱۹۹۶ ؁ء میں اجرأ پذیر ’’عالمی فروغِ اُردو ادب ایوارڈ‘‘احمد ندیم قاسمی اور پروفیسر آلِ احمد سرور سے لے کر اب تک ۱۷ پاکستانی اور ۱۷ ہندوستانی فکشن رائٹرزکی خدمت میں پیش کیا جا چکا ہے۔ ’’عالمی فروغِ اُردو ادب ایوارڈ ‘‘دنیائے اُردو میں درجۂ استناد حاصل کیے ہوئے ہے یہی وجہ ہے کہ ہر اردوادبی فورم پینل آف ججز کے فیصلے کی توثیق کرتا ہوا نظر آتا ہے۔ امسال ہیڈ آف چانسری سفارت خان�ۂ ہند عزت مآب سنیل تھپلیال ،میرِ مشاعرہ گلزار دہلوی ،پروفیسر ڈاکٹر پیرزادہ قاسم ،جناب محمد عتیق ( چیئرمین مجلس)،جناب محمد صبیح بخاری (رکن سرپرست کمیٹی ) ،ادبأ و شعرأ،عمائدینِ شہراور سیکڑوں محبانِ اردوادب کی موجودگی میں (۱۷) سترھواں عالمی فروغِ اُردو ادب ایوارڈ،تاحیات اُردو زبان وادب کی گراں قدر اور اعلیٰ ترین خدمات کے اعتراف کے طور پر پاکستان سے معروف فکشن نگار اور پرائڈ آف پرفارمنس محترمہ نثار عزیز بٹ اور ہندوستان سے فکشن نگار اور مترجم نند کشور وکرم کو تالیوں کی بھرپورگونج میں پیش کیا۔معزز مہمانوں نے مشترکہ طور پرایوارڈ یافگان کی تخلیقات پر معروف و نامورناقدینِ ادب کے لکھے گئے مضامین اور یادگار تصاویر پر مشتمل مجلس کے سالانہ ضخیم مجلے کی رونمائی بھی کی۔
Dvd-Group-02ایوارڈکی تقسیم کے بعد عظیم الشّان یادگار عالمی مشاعرہ انعقاد پذیر ہوا جس میں ہندوستان سے میرِ مشاعرہ حضرتِ گلزار دہلوی،ناظمِ تقریب انور جلال پوری، ڈاکٹر نسیم نکہت اور ڈاکٹر مشتاق صدف ،پاکستان سے پروفیسر ڈاکٹر پیرزادہ قاسمؔ ،امجد اسلام امجدؔ ،ڈاکٹر انعام الحق جاویدؔ ،رضی الدین رضی ؔ اورسلیم فوز، امریکہ سے الماس شبیؔ ،سعودی عرب سے سیّد قمر حیدر قمرؔ ،کویت سے فیاضؔ وردگ،بحرین سے ریاض شاہدؔ ،اور دوحہ قطر کی نمائندگی شوکت علی نازؔ اور مظفر نایابؔ نے کی۔ہندوستان سے ڈاکٹر راحت اندوری بوجوہ تشریف نہ لا سکے ۔مجلس کے کوآرڈینیٹر برائے پاکستان داؤد احمد ملک اورمجلس کے کوآرڈینیٹر برائے دبئی سیّد صلاح الدّین بھی مشاعرہ گاہ میں موجود تھے۔
ڈی وی ڈی کی رسمِ اجرأ کے موقع پرمجلس کی طرف سے سیّد محمد صبیح بخاری نے حرفِ تشکر ادا کرتے ہوئے کہا کہ اللہ تعالیٰ کا فضل و کرم ہے کہ ہم اپنی سالانہ تقریبات کے سلسلے کی آخری کڑی کے تکمیلی مرحلے میں داخل ہو چکے ہیں۔انشا ء اللہ مجلس اپنی تقریبات کے کامیاب انعقاد کے لیے اِسی طرح کوشاں رہے گی۔
محترم راشد نظام اور محترم محمد عتیق نے تالیوں کی گونج میں ڈی وی ڈی کیِ رونمائی کی۔ محترم محمد عتیق نے محترم راشد نظام کو ڈی وی ڈی سیٹ پیش کیا،اس موقع پر شوکت علی نازؔ نے اپناشعری مجموعہ ’’ چاہتوں کا خُمار ختم ہوا‘‘ چیئرمین مجلس محترم محمد عتیق کی خدمت میں پیش کیا۔
مہمانِ خصوصی محترم راشد نظام نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ میں جب یہاں آیا تو میں نے مجلس کی عالمی پیمانے کی تقریبات کابہت چرچا سنا،میری شدید خواہش تھی کہ میں میں اِن تقریبات میں شرکت کروں،اِس سال میں نے اِن تقریبات میں بھرپور شرکت کی اور میں اِس بات کی تائید کرتا ہوں کہ مجلس اُردو زبان اوراُردو ادب کے فروغ کے لیے تسلسل اور حسنِ انتظام سے جو خدمات سرانجام دے رہی ہے وہ اپنی مثال آپ ہیں۔ میں تقریب کے کامیاب انعقاد پر محترم محمد عتیق اور اِن کی پوری ٹیم کومبارک بادپیش کرتا ہوں۔
چیئرمین مجلس محمد عتیق نے صدارتی کلمات عطا کرتے ہوئے کہا کہ آج کا دن یقیناً مجلس کی تاریخ میں ایک اہم دن ہے،میں اِس موقع پرمجلس کے تمام کرم فرماؤں کا شکریہ ادا کرتا ہوں جن کے حسنِ تعاون سے ہم گذشتہ بیس سال سے فروغِ اُردو ادب کے لیے مصروفِ عمل ہیں۔میں مجلس کی سرپرست کمیٹی اور مجلسِ انتظامیہ کے جملہ اراکین کو مبارک باد پیش کرتا ہوں۔انھوں نے بانیِ مجلس ملک مصیب الرحمن کو خراجِ تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ مجلس کی شاندار تقریبات کے تواتر و تسلسل پر یقیناً مصیب صاحب کی روح آج شاداں و فرحاں ہو گی۔
صدارتی کلمات کے بعد ایوارڈ اور مشاعرے کے کچھ خاص اور اہم حصوں کو ملٹی میڈیا پرپلے کیا گیا جسے حاضرینِ مجلس نے ذوق و شوق سے دیکھا۔ ہائی ٹی کے بعد یہ تقریب اختتام پذیر ہوئی۔ المرسل: شوکت علی نازؔ ۔قطر

Viewers: 1412
Share